طالبان کا پاکستانی میڈیا مالکان سے پہلا باضابطہ مطالبہ

Spread the love

: انسائیڈ اسٹوری :

باخبر نہیں بلکہ معتبر زرائع کے مطابق سٹوڈنس کے ترجمان #سہیل_شاہین نے مطالبہ کیا ہے کہ عسکری محاذ پر تو انھوں نے ایک اور سپر پاور کو شکست فاش دی ہے تاہم انکے پاس میڈیا کے ایکسپرٹس نہیں جو دیوار کے اس پار دیکھنے کی صلاحیت رکھتے ہو۔ جنکے پاس ہر مسئلے کا حکیمی نسخہ بھی موجود ہو۔ افغانستان میں ایسے   دانشوروں،تجزیہ کاروں،کپی گروپوں اور ہر فن مولا اینکرز و پیراشوٹرزکا قحط الرجال ہے۔
طالبان ترجمان نے مزید کہا ہے کہ اب انکو  ففتھ جنریشن وار کا سامنا ہے۔ لہذا اپنے اپنے چینلز کے درجہ زیل دانشور پلس اینکر ہمارے حوالے کر دیں تاکہ ہم انکی پینشگوئیوں اور تجزیوں سے مستفید ہوسکیں۔ میڈیا کے محاذ پر دشمن کا سامنا کرنا سکیں اور افغان عوام کو تخریبی سوچ سے بچا سکیں۔
ارشاد بھٹی
عارف حمید بھٹی
سلیم صافی
صابر شاکر
چوہدری غلام حسین
محمد مالک
عامر متین
روف کلاسرا
ارشد شریف
سمیع ابراہیم
ڈاکٹر شاہد مسعود
ڈاکٹر معید پیرزادہ
مبشر لقمان 
شاہد زیب خانزادہ
کاشف عباسی
وسیم بادامی
منیب فاروق
شاعر ظفر اقبال کا سپوت،آفتاب اقبال
شاعر انور مسعود کی ناہنجار اولاد، عمار مسعود
انصار عباسی
چچا کپی حسن نثار
بابائے کپی ہارون الرشید
جاوید چوہدری المعرف جیدا پانڈی
کمی خان
عمران خان المروف گیلا تتر
اقرار الحسن
اسامہ غازی
حفیظ اللہ نیازی
سہیل ورائچ
ایاز میر
فلم سٹار شاہد کو لونڈا، کامران شاہد
خاور گھمن
نجم سیٹھی
بھانڈ جنید سلیم 
اور
مجیب الرحمن شامی
جلد از جلد یہ کھیپ افغانستان بجھوا دی جائے۔
حامد میر،طلعت حسین، فہد حسین، غریدہ فاروقی،عاصمہ شیرازی،مہر بخاری، ثناء بچہ  وغیرہ کی پرفامنس کو دوبارہ چیک کرکے پھر مانگ کی جائے گی۔
دوسری جانب پاکستان کے میڈیا کام کرنے والے عام ورکز نے سٹوڈنس کی اس مطالبے کو خوش آئند قراردیا ہے اور کہا ہے کہ ہمسائے ملک کا اتنا تو حق بنتا ہے انکا مطالبہ فوری پورا کیا جائے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*